مری کے نواحی علاقے گہل کارہائشی کو دوماہ قبل پشاو ر میں قتل کر دیاگیا، مقتول کی بیوہ دردر کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور

مری(عثمان علی سے)مری کے نواحی علاقے گہل کارہائشی کو دوماہ قبل پشاو ر میں قتل کر دیاگیا، مقتول کی بیوہ دردر کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور کے پی کے وزیر اعلیٰ کو درخواست دینے کے باوجود انہوں نے آنکھیں بند بند کرلی تفصیلات کے مطابق مری کے علاقہ گہل کا رہائشی شبیر احمد ولد محمد یونس کی بیوہ نعیمہ بی بی نے وزیر اعلی کے پی کے کو اپنے بیگناہ شوہر کے قتل پر داد رسی کی درخواست دی کہ اس کا شوہر 16 سال سے پشاور نیورگڑھی میں ایک پرائیویٹ کلینک پر ڈسپسنر کا کام کرتا تھا جسے نامعلوم افراد نے رات ساڑھے دس بجے گولی مار کر قتل کردیا جس کی ایف آئی آر پولیس نے کاٹ کر پوسٹ مارٹم کروا کر نعش میرے حوالے کردی تھی جسے گہل میں سپر دخاک کردیا تھا پولیس نے میری داد رسی کی یقین دہانی بھی کرائی تھی مگر دوماہ سے زائد کا عرصہ گزرنے کے باوجود میرے شوہر کے قاتلوں کو گرفتار نہ کیا جاسکا ہے بیوہ نے وزیر اعلیٰ کے پی کے کو بھی دادرسی کی درخواست دے رکھی ہے بیوہ نے وزیر اعلی کے پی کے سے دادرسی کی اپیل کی ہے۔