تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال قتل گاہ بن گیا

للِہ ( نور چغتائی سے) تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال قتل گاہ بن گیا ہارٹ اٹیک کے مریض کو دردکش انجکشن لگا کر گھر بھیج دیا گھر پہنچتے ہی مریض نے دم توڑ دیا لواحقین کا شدید احتجاج ڈاکٹروں اور ہسپتال کے سٹاف نے لواحقین کو دھکے دے کر ہسپتال سے باہر نکال دیا خادم اعلی پنجاب،ڈی سی او جہلم بھی میرا کچھ نہیں بگاڑ سکتے ایم ایس ڈاکٹرشاہد بیگ کی ہرزہ سرائی انجمن تاجران،شہریوں اور سماجی تنظیموں کی احتجاجی ریلی تحصیل پریس کلب پنڈدادنخان کے سامنے دھرنا دے کر محمدیہ چوک کو بلاک کر دیا اگر ایم ایس یا متعلقہ ڈاکٹروں کو معطل کر کے شفاف انکوائری نہ کی گئی تومکمل شٹرڈوان ہڑتال کرینگے انجمن تاجران کے جنرل سیکرٹری حافظ عبدلو احید کا اعلان تفصیلات کے مطابق تاجر شیخ جاوید علی کے لواحقین کے مطابق گزشتہ روز معروف تاجر شیخ جاوید علی کو سینے میں درد کی شکایات ہوئی تو وہ اپنے بھائی کے ساتھ تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں لے گئے تو وہاں پر ڈیوٹی ڈاکٹر طارق خان نے پین کلر انجکشن لگا کر کہا کہ گھر لے جاوٗ تو مریض نے ڈاکٹر سے اسرار کیا کہ مجھے بہت تکلیف ہے لیکن ڈاکٹر نے کہا کہ گھر لے جاو آرام آجائے گا تاجر گھر پہنچتے ہی دم توڑ گیا لواحقین دوبارہ اٹھا کر ہسپتال لائے تو ایم ایس ڈاکٹر شاہد بیگ نے موت کی تصدیق کر دی جب لواحقین نے احتجاج کیا کہ مریض کی حالت کے پیش نظر ایمرجنسی میں رکھنے کی بجائے گھر کیوں بھیج دیا اس بات پر ایم ایس ڈاکٹر شاہد بیگ آپے سے باہر ہو گیا اور دھمکیاں دینے لگا کہ خادم اعلی پنجاب،ڈی سی او جہلم بھی میرا کچھ نہیں بگاڑ سکتے اور پھر خود اور ہسپتال کے عملے کے ساتھ مل کر ہمیں دھکے دے کر ہسپتال سے باہر نکال دیا گیا ہسپتال کے متعلقہ ایم ایس اور دیگر عملے کے خلاف غم و غصے کی لہر دوڑ گئی جس پر شہریوں نے احتجاجی ریلی نکالی اورتحصیل پریس کلب پنڈدادنخان کے سامنے دھرنا دے کر محمدیہ چوک کو بلاک کر دیا ڈاکٹروں کے خلاف خوب نعرے بازی کی یاد رہے کہ گزشتہ دنوں سینئر مسلم لیگی رہنما اعجاز خان پٹھان بھی ڈاکٹروں کی مبینہ غفلت کی وجہ سے جان کی بازی ہار چکے ہیں انجمن تاجران،شہریوں اور سماجی تنظیموں نے ڈاکٹروں کے غلط رویے اور فرائض سے غفلت برتنے پر سخت سزا کرنے کا مطالبہ خادم اعلی پنجاب سے کر دیا گیا