بنگلا دیش کو شکست دیکر بھارت چیمپئنز ٹرافی کے فائنل میں پہنچ گیا

برمنگھم: چیمپئنز ٹرافی کے دوسرے سیمی فائنل میں بھارت نے بنگلا دیش کو 9 وکٹ سے شکست دے کر فائنل میں رسائی حاصل کرلی۔
ایبجسٹن میں کھیلے گئے چیمپئنز ٹرافی کے دوسرے سیمی فائنل میں بنگال ٹائیگرزنے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے مقررہ 50 اوورز میں 7 وکٹوں کے نقصان پر 264 رنز بنائے ہیں جس کے جواب میں بھارت نے مطلوبہ ہدف باآسانی ایک وکٹ کے نقصان پر پورا کرلیا۔
شیکھر دھون اور روہت شرما نے بھارت کو 87 رنز کا عمدہ آغاز فراہم کیا جب کہ شیکھر دھون 46 رنز کی اننگز کھیل کر آؤٹ ہوئے جس کے بعد کپتان ویرات کوہلی نے روہت شرما کا ساتھ دیا اور دوسری وکٹ کے لیے 178 رنز کی ناقابل شکست شراکت قائم کی، روہت شرما 123 اور کوہلی 96 رنز کے ساتھ ناٹ آؤٹ رہے۔

اس سے قبل بھارتی کپتان ویرات کوہلی نے ٹاس جیت کربنگلادیش کو بیٹنگ کی دعوت دی تو تمیم اقبال اور سومیا سرکار نے اننگز کا آغاز کیا لیکن بلیو شرٹس کو پہلی کامیابی کے لیے زیادہ انتظار نہ کرنا پڑا اور پہلے ہی اوور میں سومیا سرکاربغیر کوئی رنز بنائے بھنویشور کمار کی گیند کلین بولڈ ہوگئے جب کہ کمار نے اپنے چوتھے اوور میں جارح موڈ میں نظر آنے والے شبیر رحمان کو بھی 19 رنز پر پویلین بھیج کر بھارت کو دوسری کامیابی دلائی۔

تمیم اقبال اور مشفق الرحیم نے شاندار بلے بازی کا مظاہرہ کرتے ہوئے تیسری وکٹ کیلیے 123 رنز کی پارٹنرشپ قائم کی، اس دوران تمیم نے اپنی ںصف سنچری مکمل کی مگر وہ 154 کے مجموعی اسکور پر 70 رنز بنا کریادو کے ہاتھوں بولڈ ہوئے جب کہ مشفق الرحیم بھی نصف سنچری مکمل کرنے کے بعد زیادہ دیر وکٹ پر نہ رکے اور 61 رنز پر پویلین لوٹ گئے۔

بنگلا دیش کو سیمی فائنل تک پہنچانے والے پچھلے میچ کے ہیروز شکیب الحسن اور محمد اللہ اس پر ٹیم کی امید پر پورا نہ اترسکے اور جلد ہی پویلین واپس لوٹ گئے، شکیب الحسن 15 اور محمد اللہ 21 رنز ہی بناسکے۔ مصدق حسین کی مزاحمت بھی 15 رنز تک ہی محدود رہی تاہم کپتان مشرفی مرتضیٰ آخر تک ڈٹے رہے اور 30 رنز پر ناقابل شکست رہے۔

بھارت کی جانب سے یادو، بمراہ اور بھنویشور نے 2،2 جب کہ جدیجا نے ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

واضح رہے چیمپنز ٹرافی کے آخری معرکہ لندن میں 18 جولائی کو ہوگا جہاں بھارت کا مقابلہ پاکستان سے ہوگا۔