عرصہ دراز سے دریا کے بیلہ میں رہنے والے 5 دیہاتوں کے ہزاروں مکینوں کی سن لی گئی،عوام کو دریا پر پل مل گیا

پنڈدادنخان(سکندر گوندل سے) عرصہ دراز سے دریا کے بیلہ میں رہنے والے 5 دیہاتوں کے ہزاروں مکینوں کی سن لی گئی،عوام کو دریا پر پل مل گیا،اب پیدل دریا عبور کرنے یا کشتی کے استعمال سے جان چھوٹ جائے گی،پارلیمانی سیکرٹری مقامی ایم پی اے چوہدری نذر گوندل نے پل کا افتتاح کر دیا،تفصیلات کے مطابق تحصیل پنڈدادنخان اور ملکوال کے درمیان دریائے جہلم کے بیلہ میں گاؤں کانیانوالہ اور دیگر دیہاتوں کے رہنے والے ہزاروں افراد کے رستے کا مسئلہ عرصہ دراز سے چلا آرہا تھاجس کی وجہ سے بچے اپنے سکولوں اور دیگر لوگ اپنے کام کاج کو جانے کے لئے سردی میں دریائے جہلم کے ٹھنڈے پانی سے گزر رہے تھے اور لوگوں کا مطالبہ تھاکہ ہمارے چاروں طرف دریا ہے اور ہم ایک جزیرہ نما علاقہ میں رہ رہے ہیں جبکہ ہم سے ہر الیکشن میں ووٹ تو لے لئے جاتے ہیں مگر ہمارے پل کادیرینہ مسئلہ کسی حکومت نے حل نہیں کیا۔کانیانوالہ اور دیگر دیہاتوں کے دریا پر پل نہ ہونے کے مسائل پرمقامی ایم پی اے حلقہ پی پی 27 پنڈدادنخان چوہدری نذر حسین گوندل نے ایک سال قبل مذکورہ جگہ کا دورہ کیا اور معاملہ کی سنگینی کو دیکھتے ہوئے اہل علاقہ کو مسئلہ حل کروانے کی یقین دہانی کروائی۔بالآخر کاوش رنگ لے آئی اور حکومت کی طرف سے کانیانوالہ اور دیگر دیہاتوں کی دس ہزار سے زائد آبادی کا اہم اور دیرینہ مسئلہ حل ہونے کو آیا جب آج سے چار ماہ قبل ایم پی اے حلقہ پی پی 27 چوہدری نذر حسین گوندل نے پل کی تعمیر کا اعلان کر دیا اوراب ایم پی اے نے پل کی تعمیر مکمل ہونے پر باقاعدہ افتتاح کرتے ہوئے میڈیا کو بتایا کہ حکومت نے ایک کروڑ 75 لاکھ روپئے کی مالیت سے تحصیل ملکوال اور پنڈدادنخان کے درمیان دریائے جہلم کے بیلہ میں واقع کانیانوالہ اور دیگر دیہاتوں کے لئے پل تعمیر کروا کر دیرینہ مسولہ حل کر دیا ہے۔اس موقع پر اہل علاقہ نے ایم پی اے نذر حسین گوندل کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے اس دیرینہ مسئلہ کے حل پر حکومت اور ایم پی اے نذر گوندل کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔