دمشق میں خودکش کار بم دھماکے میں 18 افراد ہلاک

دمشق: شام کے دارالحکومت میں خود کش کار بم دھماکے کے نتیجے میں 18 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے۔
غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق دمشق میں حالیہ مہینوں کے دوران ہونے والا یہ بدترین حملہ ہے تاہم اس کی ذمہ داری کسی تنظیم کی جانب سے قبول نہیں کی گئی۔ شامی میڈیا اور مانیٹرنگ گروپ برائے انسانی حقوق کا کہنا ہے کہ اتوار کی صبح سیکیورٹی فورسز نے تین خودکش کار بمباروں کو روکنے کی کوشش کی اور نہ رکنے پر ان کا تعاقب شروع کر دیا۔ ان میں سے دو گاڑیاں دمشق کے مضافاتی علاقوں میں ہی دھماکے سے تباہ ہوگئیں تاہم ایک گاڑی مشرقی تحریر اسکوائر ڈسٹرکٹ تک پہنچنے میں کامیاب ہو گئی۔
سیکیورٹی اہلکاروں نے اس گاڑی کو بھی گھیرے میں لے لیا تھا تاہم اس میں موجود خودکش بمبار نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا جس کے نتیجے میں 7 سیکیورٹی اہلکاروں سمیت 18 افراد ہلاک ہو گئے۔
واضح رہے کہ شام میں 2011 سے میں حکومت کے خلاف مظاہرے شروع ہوئے تھے جو اب کثیر الجہتی جنگ میں تبدیل ہو چکی ہے اور اس خانہ جنگی میں اب تک 3 لاکھ 20 ہزار سے زائد افراد ہلاک اور لاکھوں بے گھر ہو چکے ہیں۔