غریبوال تیس ہزار آبادی والا یہ گاؤں ہر بنیادی سہولت سے محروم ،پینے کا صاف پانی تک دستیاب نہیں

پنڈدادن خان ( زاہد حیات ) یونین کونسل ساؤوال کا دوسرا بڑا گاؤں غریبوال ہے لگ بھگ تیس ہزار آبادی والا یہ گاؤں ہر بنیادی سہولت سے محروم ہے۔ پینے کا صاف پانی گیس صحت یہ سب اھل غریبوال کو دستیاب نہیں ہیں۔ گاؤں کی گلییوں کی حالت بہت ہی قابل رحم ہے اکثر گلیاں ندیان بن چکی ہیں جن سے گزرنا جوئے شیر لانے کے مترادف ہے ۔ کوئی بھی صحت کی سہولت نا ہونے کی وجہ سے اھل گاؤں عطائی ڈاکٹروں کے ہاتھوں لٹ رہے ہیں۔ گاوں کی مین گلی کی حالت بہت ہی ابتر ہے اگر زرا سی بارش ہو جائے تو اس گلی میں آمد و رفت بند ہو جاتی ہے اور ستم ظریفی یہ کہ اس روڈ پر سے گزر کے جنازہ گاہ تک جانا پڑتا ہے۔ اگر بارش کے موسم میں کوئی فوت ہو جائے تو میت کو جنازہ گاہ لے جانا ایک امتحان اور عذاب سے کم نہیں ہے ۔ بارش زیادہ ہو جائے تو گاؤں سے نکلنے کے سارے راستے بند ہو جاتے ہیںَ پورا غریبوال ایک جزیرے کی شکل اختیار کر لیتا ہے۔ جس سے باہر نکلنے کے لیے کشتیاں کی ضرورت ہوتی ہے ۔ ہاد رہے کہ اس گاؤں کے چوہدری بہت بااثر ہیں اور یہاں سے ہمیشہ ن لیگ ہی جیتتی رہی ہے، اھل گاؤں نے حکومتی پارٹی سے اپیل کی ہے کہ ایک نظر کرم اھل غریبوال پر بھی