چک نظام ریلوے وکٹوریہ پل کے اطراف پیدل چلنے والے رستے احتیاطی تدابیر کے تحت موٹرسائیکل سواروں کے لئے بند

پنڈدادنخان(نامہ نگار)چک نظام ریلوے وکٹوریہ پل کے اطراف پیدل چلنے والے رستے احتیاطی تدابیر کے تحت موٹرسائیکل سواروں کے لئے بند کئے گئے ہیں،ٹوٹے ہوئے پشتوں کی جگہ نئے لکڑی کے پشتے لگا کر کچھ روز تک پیدل چلنے والوں کے لئے رستہ کھول دیا جائے گا،ان خیالات کا اظہار ڈویژنل سپرنٹنڈنٹ ریلوے راولپنڈی صاحبزادہ امتیاز احمد نے سینئر صحافی سکندر حیات گوندل کے ساتھ ٹیلی فونک گفتگو کے دوران کیا،انہوں نے کہا کہ مذکورہ رستے کی مستقل مضبوطی کے لئے ریلوے ہیڈکوارٹر کو بھی تجاویز دی ہیں تاہم اسکے لئے ٹائم لگے گا۔صاحبزادہ امتیاز نے مزید کہا کہ پنڈدادنخان تا ملکوال دن میں دو دفعہ ٹرین آتی جاتی ہے تاہم اسکے ٹرپ بڑھا کر 4 دفعہ کرنے کی بھی مشاورت کررہے ہیں تا کہ عوام کو زیادہ سے زیادہ ریلیف دیا جا سکے۔انہوں نے کہا کہ روزانہ تحصیل پنڈدادنخان سے ملکوال جانے والے ہزاروں افراد کے سفر کی مشکلات کا اندازہ ہے اور پاکستان ریلوے اس حوالہ سے جس حد تک ممکن ہوسکا اپنے وسائل کو بروئے کار لاتے ہوئے عوامی ریلیف کا باعث بنے گا،لیکن پل سے ملحقہ رستہ موٹرسائیکل سواروں کے لئے تب ہی کھلے گا جب ان لکڑی کے پشتوں کی جگہ کسی مضبوط متبادل کا بندوبست نہیں ہو جاتا۔واضع رہے کہ چند روز قبل مذکورہ ریلوے پل سے گزرتے ہوئے سیلفی لینے کے دوران ایک جواں سال بچی دریا میں گر کر جاں بحق ہو گئی تھی اور اسکے لواحقین نے یہ رستے بھی بند کر دیئے تھے اور پنڈدادنخان جانے والی ٹرین کو بھی کئی گھنٹے روکے رکھا جسکے بعد ریلوے انتظامیہ کی طرف سے پیدل چلنے والوں اور موٹرسائیکل سواروں کا رستہ بند کر دیا گیا ہے جس سے روزانہ ہزاروں افراد گزرتے تھے جو آجکل سخت ذہنی کوفت اور پریشانی میں مبتلا ہیں۔