دہشت گردی کیخلاف رویے میں اگر پاکستان تبدیلی نہیں لایا تو پھر امریکا اپنا راستہ اختیار کرے گا: جان مکین

کابل ( آن لائن)امریکی سینٹر جان مکین نے کہا ہے کہ پاکستان نے حقانی نیٹ ورک کے محفوظ ٹھکانوں کے خلاف کارروائی کی ہے، تاہم اسے مزید ٹھوس اور سخت کارروائیاں کرنے کی ضرورت ہے۔ اگردہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان اپنا رویہ تبدیل نہیں کرتا تو پھر امریکا کو اپنا رویہ تبدیل کرنا پڑے گا۔
غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق پاکستان کے دورے پر آئے امریکی سینٹر جان مکین نے افغان سرزمین پر قدم رکھتے ہی اپنا پینترا بدل لیاان کا کہنا تھا کہ وزیرستان کو دہشت گردوں سے صاف کرنے سمیت پاکستان نے دیگر اہم کام بھی کیے ہیںمگر پاکستان حقانی نیٹ ورک کیخلاف کارروائی کرے۔حکومت پاکستان کو دھمکی آمیز لہجے میں مخاطب کرتے ہوئے امریکی سینٹر کا کہنا تھا کہ وہ یہ ساری صورت حال امریکی صدر ٹرمپ، جنرل میٹس اور جنرل مک ماسٹر کو بتائیں گے۔ مکین نے امید ظاہر کی کہ پاکستان حقانی نیٹ ورک سمیت دہشت گرد تنظیموں کے خلاف مزید تعاون کرے گا۔