صحافی برادری کی فلاح و بہبود میری اولین ترجیح ہے،ملک وسیم اختر

جہلم(مرزا عبدالجبار)صحافی برادری کی فلاح و بہبود میری اولین ترجیح ہے۔مصطفی بٹ سب صحافی بھائیوں کا ایک پلٹ فارم پر اکھٹا ہونا وقت کی اہم ضرورت تھی ملک وسیم اختر ،تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز صدر جہلم پریس کلب میں ایک اجلاس منعقد ہوا جس میں صحافیوں کو درپیش مسائل کے حوالہ سے گفتگوکرتے ہوئے صدر مہر محمد الیاس نے کہا ہے کہ وقت کی اہم ضرورت ہے کہ ایک تنظیم بنائی جائے جو کہ غیر سیاسی ہو جس میں تمام صحافیوں نے مشترکہ طور پر تنظیم بنائی جائے جس کا نام جہلم میڈیا ون بنا دی گئی جس کا صدر مصطفی بٹ کو بنا دیا گیا ہے اور دیگر صحافیوں دوستوں مہر محمد الیاس ،ملک وسیم اخترچیئر مین جہلم پریس کلب ،راجہ نوبہار خان صدر الیکٹرونک میڈیاجہلم،میاں ساجد،راجہ جہانزیب،دلنواز احمد سابق جنرل سیکرٹری جہلم پریس کلب ،رانا نوید الحسن ،سید مستفیض اقبال بخاری،وقار تنظیم،عمران شکیل،جاویر اقبال مرزا،اشتیاق پال،راجہ شاہد ،جہانگیر ڈار،ملک فدا،حاجی طاہرنائب صدر جہلم پریس کلب،،سید قلب حسنین حیدر،عاصم عبداللہ، شاہدمحمود جنجوعہ،ملک ذیشان،ثاقب کشمیری،مہر آصف،مرزا عبدالجبار،راجہ شاہدجہلم پوسٹ،مرزا فرازبیگ ،مرزا راحیل،محمد مزمل مغل۔ڈاکٹر راشد علی ،چوہدری محدوم،شکیل احمد ،راجہ جاوید ،صوفی محمد عزیز،سعید احمد منہاس سعیلہ،راجہ عمران ،وسیم قریشی،حافظ حاکم،ظفر محمود ڈار،فضل رحمان جنجوعہ،اور دینہ اور سوہاوہ کے علاوہ پنڈدادن خان کی صحافی برادری نے بھر پور ساتھ دینے کی یقین دھانی کروائی اور امید ظاہر کی کے جسے مصطفی بٹ نے اپنے پہلے ٹینور میں میڈیا ون کے پلیٹ فارم سے صحافیوں کو متحد کیا اور عوامی مسائل کو اجاگر کرنے میں اہم کردار اداکیا،آئندہ بھی اسی طرح عوامی مسائل کو اجاگر کرنے میں جہلم میڈیا ون کی ٹیم بھر پور اپنا کردار ادا کرے گی،صدر جہلم میڈیا ون مصطفی بٹ نے کہا کہ جہلم کی صحافی برادری نے مجھ پر جو ذمہ داریاں عائد کی ہیں میں وہ انشااللہ اپنی ذمہ داریاں پوری کرو گا،اور صحافی بھائیوں کی فلاح بہبود میری اولین ترجیح ہو گی،کیونکہ چند شر پسند عناصر جہلم کی عوام کو بلیک میل کرکے صحافیوں کو بدنام کر رہے ہیں،ہم ان کا قلعہ قمع کرنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑیں گے،کیونکہ یہ لوگ خبر تک نہیں بنا سکتے ،ملک وسیم اختر نے کہا کہ صحافی بھائیوں کو ایک پلیٹ فارم پر اکھٹا کرنا وقت کی اہم ضرورت تھی کیونکہ صحافی کسی کی پگڑی اچھالنا صحافی کا کام نہیں ،صحافی کا جرائم کی نشاندہی کرنا ہے۔