ہمایوں سعید فلم پروجیکٹ غازی کے پریمیئر سے اٹھ کر کیوں گئے؟

کراچی: پاکستانی سینما کی تاریخ میں ایسا پہلی بار ہوا ہے کہ پریمئیر کے باوجود کسی فلم کی ریلیز اچانک روک دی گئی ہو، ایسا ہی کچھ گزشتہ روز ہمایوں سعید کی فلم ’’پروجیکٹ غازی‘‘ کے ساتھ ہوا جس کی ریلیز روکنے والے کوئی اور نہیں بلکہ خود ہمایوں سعید تھے۔
سائنس فکشن پر مبنی ایکشن سے بھرپور پاکستان کی پہلی سپر ہیرو فلم ’’پروجیکٹ غازی‘‘ کل ملک بھر میں نمائش کیلئے پیش کی جانی تھی، ہمایوں سعید، طلعت حسین، شہریار منور اور سائرہ شہروز جیسی بڑی کاسٹ پر مشتمل فلم ریلیز سے پہلے ہی عوامی مقبولیت حاصل کر چکی تھی، فلم کی ریلیز کیلئے ملک بھر کے ملٹی پلیکس سینما گھروں میں اسکرینیں تک تیار تھیں لیکن اچانک فلم کی ریلیز روک دی گئی، یہ خبر شائقین پر بجلی بن کر گری اور اس خبر سے دیگر افراد کے ساتھ سینما مالکان اور فلم پروڈیوسرز میں بھی شدید تشویش کی لہر دوڑ گئی۔
میڈیا رپورٹس کے مطابق اداکار ہمایوں سعید نے بالآخر اس راز سے پردہ اٹھاتے ہوئے کہا ہے کہ فلم کی ریلیز ان کے کہنے پر روکی گئی ہے، انہوں نے بتایا کہ فلم کے پریمیئر میں دیگر افراد کے ساتھ وہ خود بھی شریک تھے، فلم دیکھنے کے دوران مجھے اندازہ ہوا کہ فلم ابھی نامکمل ہے اور فلم کے ہر شعبے میں انتہائی بھونڈے پن کا مظاہرہ کیا گیا ہے، فلم میں جگہ جگہ تکنیکی خامیاں بھی موجود تھیں جس کی وجہ سے ان کے ساتھ بیٹھ کر فلم دیکھنے والے افراد کچھ دیر بعد ہی اٹھ کر چلے گئے جبکہ میں خود بھی زیادہ دیر تک فلم نہ دیکھ سکا اور درمیان سے ہی اٹھ کر چلا گیا۔
ہمایوں سعید نے کہا فلم بری نہیں لیکن مجھ سے دیکھی نہیں گئی اور میں نے فیصلہ کیا کہ فلم کو اس وقت ریلیز کرنا مناسب نہیں ہو گا کیونکہ اس کو بہتر بنانے کے لئے ہمیں مزید وقت درکار ہے، جیسے ہی فلم مکمل ہو گی ہم اس کی ریلیز کی تاریخ کا اعلان کر دیں گے۔
واضح رہے کہ ہمایوں سعید، سائرہ شہروز اور شہریار منور جیسی بڑی کاسٹ پر مشتمل فلم ’’پروجیکٹ غازی‘‘ کا انتظار شائقین بہت عرصے سے کررہے تھے، فلم کی ہدایات نادر شاہ نے دی ہیں جبکہ فلم کے پروڈیوسر محمد علی رضا ہیں، فلم کی دیگر کاسٹ میں عدنان جعفر، طلعت حسین اور عامر قریشی شامل ہیں.