بنیادی مرکزصحت پائی خیل میں کتے اورسانپ کے کاٹے کی ویکسین نایاب

پائی خیل (نامہ نگار)بنیادی مرکزصحت پائی خیل میں کتے اورسانپ کے کاٹے کی ویکسین نایاب ،علاقہ مکین نجی کلینکس سے مہنگے داموں علاج کرانے پرمجبورتفصیلات کے مطابق حکومت پنجاب کے بلندوبانگ دعوؤں کے باوجودبنیادی مرکزصحت پائی خیل میں عرصہ درازسے سانپ اورکتے کے کاٹے کی ویکسین نایاب ہے ۔گزشتہ ماہ کے دوران سانپ اورکتے کے کاٹے کے 25مریضوں کوڈی ایچ کیوہسپتال میانوالی ریفرکیاگیا۔اب جبکہ متعددمریض پرائیویٹ علاج معالجہ کرانے پرمجبورہیں ۔جسکی وجہ سے پرائیویٹ کلینک مالکان کی چاندی ہوگئی ہے ۔کیونکہ پرائیویٹ کلینک مالکان راتوں رات امیربننے کے چکرمیں3500سے4000روپے میں ویکسین کی فروخت کرکے اپنی چاندی کھری کررہے ہیں۔کئی بارافسران بالاکوآگاہ کرنے کے باوجودکوئی شنوائی نہیں ہورہی ۔افسران بالاکاغذی کاروائی پوری کرنے پرلگے ہوئے ہیں ۔جبکہ عملی اقدامات نہیں اٹھائے جارہے ۔علاوہ ازیں بنیادی مرکزصحت پائی خیل کاعملہ مریضوں کے ساتھ ٹال مٹول کررہاہے۔گورنمنٹ کی جانب سے بنیادی مرکزصحت پائی خیل کومریضوں کے لئے فراہم کیاجانے والا AC بندپڑاہے۔علاقہ مکینوں نے سیکرٹری ہیلتھ پنجاب سے ذمہ داروں کے خلاف نوٹس لینے کامطالبہ کیاہے۔