صومالیہ کے دارالحکومت میں خودکش حملہ، 13 افراد ہلاک

موغادیشو: صومالیہ کے دارالحکومت میں خودکش حملے کے نتیجے میں 13 افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہوگئے ۔
بین الاقوامی میڈیا رپورٹس کے مطابق موغادیشو کے مصروف اور گنجان آباد علاقے میں واقع ہوٹل کو دہشت گردوں نے نشانہ بنایا، کار میں سوار خودکش بمبار نے تیز رفتار گاڑی ہوٹل کے مرکزی دروازے سے ٹکرادی جس سے زوردار دھماکا ہوا اور پھر مزید حملہ آور فائرنگ کرتے ہوئے ہوٹل کے اندر داخل ہوگئے۔
حملہ آوروں نے ہوٹل کے سیکورٹی گارڈ کو قتل کرنے کے بعد وہاں مقیم لوگوں پر اندھادھند فائرنگ کردی، خودکش حملے اور فائرنگ کے نتیجے میں 13افراد کے ہلاک ہونے کی تصدیق کی گئی ہے جب کہ واقعے میں درجنوں زخمی ہیں اور ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے۔
واقعہ کی اطلاع ملتے ہی سیکورٹی فورسز نے جائے وقوعہ کو گھیرے میں لے لیا جب کہ ان کا حملہ آوروں سے فائرنگ کا تبادلہ بھی ہوا۔ پولیس کا کہنا تھا کہ جس ہوٹل کو نشانہ بنایا گیا وہاں بسااوقات فوجیوں،ارکان پارلیمنٹ اور اعلیٰ حکومتی شخصیات کا آنا جانا رہتا ہے۔
فوری طور پر کسی گروپ یا تنظیم نے حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی البتہ موغودیشو میں کالعدم شدت پسند تنظیم الشباب سرکاری تنصیبات،فوجیوں اور عوامی مقامات کو نشانہ بناتی رہی ہے۔
واضح رہے کہ کچھ روز قبل ہی موغادیشو میں خوفناک حملے میں350سے زائد افراد لقمہ اجل بن گئے تھے جب کہ 500سے زائد زخمی ہوئے تھے۔