معمولی روشی دینے والی موم بتی نے غریب محنت کش کا گھر ہی جلا دیا

پنڈدادنخان(سکندر گوندل سے)معمولی روشی دینے والی موم بتی نے غریب محنت کش کا گھر ہی جلا دیا،پانچ سالہ بچی جاں بحق،تفصیلات کے مطابق پنڈدادنخان کے محلہ حسین آباد کے رہائشی ناصر علی ولد طالب حسین نے 16 اور 17 فروری کی رات بجلی بند ہونے پر رات کے وقت موم بتی جلائی اورکچھ دیر بعد جب اسکی آنکھ لگ گئی توموم بتی کی معمولی روشنی نے قریبی کپڑوں کو لپیٹ میں لے لیا اور آگ کا شعلہ بھڑک اٹھا جس نے پورے گھر کو لپیٹ میں لے لیا،آس پاس کے لوگوں نے چیخ و پکار کے بعد اپنی مدد آپ کے تحت آگ پر کسی حد تک قابو تو پایا مگردیکھتے ہی دیکھتے محنت کش کا سارا سامان نہ صرف جل کر راکھ ہو گیا بلکہ ناصر علی اسکی بیوی اور بچے بھی زخمی ہو گئے اور پانچ سالہ بچی جھلسنے کی وجہ سے جاں بحق ہو گئی۔ناصر علی کے گھر کا سارا سامان ہی جل گیا اور اس نے بتایا کہ اخوت کے دفتر سے لی گئی قرض کی رقم بھی سامان میں جل گئی ہے۔ناصر علی اور اسکی بیوی نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ انکی مدد کی جائے۔