جہلم چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کا ماہانہ اجلاس

جہلم (عبدالغفوربٹ)چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کا ماہانہ اجلاس صدر ارشد محمود کی صدارت میں منعقد ہوا جس میں ملک میں پے در پے ہونے والی دہشت گردی کی مذمت اور مرحومین کیلئے دعائے مغفرت کی گئی اور تمام ایگزیکٹو ممبرا ن نے پاک آرمی کی دہشت گردی کے خلاف کوششوں کو سراہا اور زخمیوں کیلئے دعائے صحت کی گئی ،تفصیلات کے مطابق ماہانہ اجلاس صدر ارشد محمود کی قیادت میں ہوا اس اجلاس میں تلاوت قرآن پاک شرف ایگزیکٹو ممبر یونس گوندل کے حصے میں آیا،اور اجلاس کی کاروائی شروع ہوتے ہی تمام ممبران نے دہشت گردی میں شہید ہونے والے پاکستانیوں کیلئے فاتحہ خوانی اور دعائے مغفرت اور درجات میں بلندی کی دعا کی گئی ،اور ان کے زخمی ساتھیوں کیلئے اللہ کریم سے دعائے صحت طلب کی گئی،اس کے ساتھ ہی ممبران نے پاک فوج کی صلاحیتوں اور دہشت گردی کے خلاف پے در پے کامیابیوں کو سراہا اور اس بات کا اعادہ کیا کہ ہم پاک آرمی کے ساتھ کندھے سے کندھا ملائے کھڑے ہیں اس کے بعد سی پیک منصوبے خدو خال کا جائزہ لیاگیا اور اس سی پیک کو پاکستان انڈسٹری کیلئے مستقبل میں ایک کمزور کر دینے والا معاہدہ قرار دیا اورایک قرار داد منظور کی گئی کہ ہم سی پیک معاہدے کی مذمت کرتے ہیں جس میں کاروباری طبقے اور انڈسٹری کو نقصان پہنچنے کا اندیشہ ہو۔اس کے ساتھ ہی ایف بی آر کے نئے فیصلوں کی بھی مذمت کی گئی جس سے کاروباری طبقے اور انڈسٹریلسٹ کو ٹیکس کا بوجھ بڑھنے اور ان کے کاروبار کی حوصلہ شکنی کرنے پر تمام ممبران نے مذمت کی اس کے ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ ان غیر منصفانہ فیصلوں سے سرمایہ کاری رکنے کا اندیشہ ہے اور بیرون ملک سے سرمایہ کاری بھی رک سکتی ہے۔لہذا ابھی وقت ہے کہ حکومت وقت کسی بھی فیصلے کو نافذ کرنے سے قبل مرکزی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری اسلام آباد سے مشاورت ضروری کرے تاکہ اس کی وجہ سے کاروباری اور انڈسٹریلسٹوں کو بعد میں ان کو اس کی مذمت نہ کرنی پڑے۔