سڑک کی ناقص تعمیر کے باعث ٹریفک جام رہنا معمول بن گیا،

پنڈدادنخاں (سکندر گوندل سے)سڑک کی ناقص تعمیر کے باعث ٹریفک جام رہنا معمول بن گیا،تفصیلات کے مطابق للِہ انٹرچینج کے بالکل قریب واقع قصبہ ٹوبھہ کے لاری اڈے پر ٹھیکیدار کی جانب سے سڑک پر غیر معیاری کام اور ناقص میٹریل کے باعث سڑک تباہ حالی کا شکار ہو کر رہ گئی ہے اور چھوٹی گاڑیوں کے علاوہ بڑی ٹرانسپورٹ بھی بمشکل گزر پاتی ہیں،صورت حال یہ ہے کہ لاری اڈا ٹوبھہ سے عام حالات میں بھی گزرنا مشکل ہوچکا ہے اور اگر ذرا سی بارش ہو جائے تو ٹریفک جام رہنا معمول بن کر رہ جاتا ہے ۔محکمہ ہائی وے اور مقامی انتظامیہ سمیت متعلقہ ٹھیکیدار کی طرف سے اہم مسئلہ کو بالکل نظر انداز کیا جارہا ہے۔ اس حوالہ سے متعلقہ ٹھیکیدار مظہر گوندل کا موقف تھا کہ ایک سال قبل میں نے یہ سڑک بنائی تھی اور اب اسکا کوئی حل نہیں ہے کیونکہ نئے بلدیاتی نظام کے باعث اب متعلقہ ایکسئین جہلم کی بجائے راولپنڈی میں ہے میں اس حوالہ سے کچھ نہیں کر سکتا کیونکہ سڑک پر پانی کھڑا ہو گا تو سڑک خراب تو ہو گی۔مقامی شہریوں انور گوندل،محمد اکرم،ملک ابراراور دیگر نے ڈپٹی کمشنر جہلم اور ضلعی آفیسر روڈز سے مطالبہ کیا ہے کہ قصبہ ٹوبھہ میں روڈ کی شکستہ حالی پر توجہ دے کر سڑک کی مرمت کی جائے ورنہ یہاں حادثات کا خدشہ بھی ہے۔