سول ہسپتال جہلم میں ریفر سسٹم عروج پر

جہلم (اصغر علی مرزا ) سول ہسپتال میں ریفر سسٹم عروج پر ، ہسپتال کے تمام سپیشلسٹ ڈاکٹر مریضوں کی اکثریت کواپنے نجی کلینکوں کا راستہ دکھانے لگے۔ غیر ضروری میڈیکل ٹیسٹوں سے بھی لاکھوں کمانے لگے، تفصیلات کے مطابق حکومت کی جانب سے کروڑوں روپے کی مراعات اور تنخواہوں کے باوجود سول ہسپتال میں تعینات تقریبا تمام ہی سپیشلسٹ ڈاکٹرز نے ہسپتال آنے والے مریضوں کی اکثریت کو اپنے نجی ہسپتالوں ، کلینکوں او ر لیبارٹریز میں ریفر کرنا معمول بنا رکھا ہے ۔ ڈاکٹروں کا زیادہ تر ٹارگٹ مالی طور پر مستحکم افراد ہوتے ہیں جن کو ڈاکٹر ہسپتال میں ناقص سہولیات اور ناقص ٹیسٹوں سے ڈرا دھمکا کر ہسپتال کے عین مرکزی دروازے پر واقع اپنے ہسپتالوں میں جانے کا مشورہ دیتے ہیں ۔ اور اپنی ڈیوٹی ختم ہونے کے بعد انہی مریضوں کو نجی ہسپتالوں میں غیر ضروری ٹیسٹوں اور ادویات کے ذریعے لوٹنا شروع کر دیتے ہیں ۔ کئی ایک ڈاکٹروں نے مخصوص لیبارٹریز سے مک مکا کررکھا ہے اور صرف وہیں کی ٹیسٹ رپورٹ کو قابل قبول قرار دیتے ہیں ان مخصوص لیبارٹریز میں مریضوں سے کئی گنا زائد چارجز وصول کئے جاتے ہیں ۔ شہریوں نے وزیر اعلی پنجاب اور سیکرٹری صحت سے مطالبہ کیا ہے کہ ہسپتال کے سپیشلسٹ ڈاکٹروں کو ریفر ل سسٹم سے روکا جائے ۔