پاکستان میں تعلیمی معیار کو بہتر بنانے کی مزید ضرورت ہے،سید مسرت رضوی

جہلم(افتخار کاظمی) پاکستان میں تعلیمی معیار کو بہتر بنانے کی مزید ضرورت ہے ،ملک کی ترقی اور نوجوان نسل کے روشن مستقبل کیلئے ضروری ہے،ان خیالات کا اظہار سید مسرت رضوی نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ ملک میں مساوی تعلیمی نظام ہو تو امیر اور غریب کے بچے باآسانی تعلیم حاصل کر سکیں،جبکہ ایسا نہیں ہے ،امیر لوگوں اور صاحب حیثیت لوگوں کے بچے مہنگے اور پرائیویٹ سکولوں میں تعلیم حاصل کرتے ہیں جس کی ماہانہ فیس بھی ہزاروں روپے میں ادا کرتے ہیں جبکہ غریب کا بچہ اگر لائق ہو اور اچھی تعلیم حاصل کرنا چاہتا ہو تو وہاں تک نہیں جا سکتا ،جس کی وجہ تعلیمی نظام میں فرق ہے جبکہ ہمارے ملک کی نسبت بھارت میں تعلیمی معیار یکساں ہے چاہے سرکاری سکول ہو چاہے پرائیویٹ سکول ہو وہاں کا تعلیمی نظام سب کیلئے ایک جیسا ہے اور یہی وجہ ہے کہ بھارت تعلیمی میدان میں کافی آگے ہے،جب ہمارے ملک میں بھی تعلیمی نظام کو ہر خاص وعام کیلئے یکساں بنایا جائیگا تو غریب اور متوسط لوگوں کے بچے بھی اعلیٰ تعلیم سے مستفید ہوں گے اور اس کی وجہ سے ہمارا ملک خوشحال ہوگا اور ہماری نوجوان نسل کا بہتر مستقبل بنے گا جنہوں نے کل کو ہمارے ملک کی بھاگ دوڑ سنبھالنی ہے ۔